13 نومبر 2018
تازہ ترین
بال ٹیمپرنگ میں ملوث نہیں، ہینڈز کومب

آسٹریلوی بائولر پیٹر ہینڈز کومب نے کہا ہے کہ بال ٹیمپرنگ سکینڈل میں کسی طور بھی ملوث نہیں۔ اس حوالے سے جو ویڈیو دکھائی جا رہی ہے اسے ایڈٹ کیا گیا ۔ مارچ 2018میں جنوبی افریقہ میں تیسرے ٹیسٹ میچ کے دوران سامنے آنے والے اس سکینڈل  میں کپتان سٹیون سمتھ، نائب کپتان ڈیوڈوارنر اور اوپنر کیمرون بینکرافٹ آئی سی سی کی سزا بھگت رہے ہیں۔ آسٹریلوی بائولر پیٹر ہینڈز کومب کے مطابق ویڈیو کے ذریعے تاثر دیا جا رہا ہے کہ میں نے بال ٹیمپرنگ کیلئے کوچ کی ہدایات کپتان سمتھ اور کیمرون بینکرافٹ تک پہنچائیں۔ بائولرکا دعویٰ ہے کہ ویڈیو میں جو مناظر دکھائے گئے، ان میں کم از کم20منٹ کا وقفہ ہے لیکن ویڈیو میں انہیں جوڑ کر اس طرح ایڈٹ کیا گیا جیسے ایک ہی وقت کا منظر ہے ۔ اس منظر میں پہلے کوچ واکی ٹاکی پر ہینڈز کومب سے بات کرتے دکھائی دیئے اور اس کے بعد کومب میدان میں کیمرون بینکرافٹ سے کوئی بات کرتے ہوئے ہنس رہے ہیں۔ اس کے بعد بینکرافٹ نے گیند کو ریگمال سے کھردرا کیا۔ بائولر کے مطابق واکی ٹاکی پر بات اور میرے گرائونڈ میں جانے کے درمیان 20تا25منٹ کا وقفہ تھا اور میں متبادل کے طور پر میدان میں گیا تھا۔ یہ سب کچھ میڈیا کا کیا دھرا ہے جس کی وجہ سے مجھے بدنام کیا جا رہا ہے۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟