آرکٹیک میں پراسرار  آوازیں

آرکٹیک میں پراسرار  آوازیں

جمعہ کو ذرائع ابلاغ نے فوج کے حوالہ  سے  بتایا کہ  بحیرہ آرکٹیک میں پر اسرار آ وازوں کا پتہ چلانے کے لئے گشت کرنے والی  ایک ملٹری  ٹیم  اور آوازوں کا پتہ چلانے والے خصوصی ماہرین بھیج دئے گئے ہیں ۔ جو ان پراسرارآوازوں کے بارے میں یہ پتہ چلائیں گے کہ کیا یہ آوازیں   سمندری جانوروں کی ہیں یا  ان آوازوں کا ذریعہ کچھ اور ہے ۔ ماہرین کے مطابق شمال مغرقی راستہ اور ہڈسن بے نامی آبنائے میں زیادہ تر نر وہیلز جھکے سر والی وہیلز اور گول گھونگھے پائے جاتے ہیں مقامی افسر پال کواسا نے بتایاکہ گذشتہ سال اس آبنائے سے تمام جانور غائب ہو گئے تھے تاہم اب سمندر کی نچلی تہ میں سے شور شرابہ جیسی آوازیں آرہی ہیں اور یہ آوازیں کافی اونچی ہیں  یہ امر  قابل ذکر ہے کہ کینیڈین آرمی نے  نومبر میں بھی سینسرز والی بیٹری سے آراستہ ایک جہاز گشت کے لئے یہاں بھیجا تھا ۔  


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟