24 اپریل 2019
تازہ ترین
ایف بی آر کی نان فائلرز کے 25 ہزار سے زائد رقم نکلوانے پر ٹیکس لگنے کی تردید

ایف بی آر کی نان فائلرز کے 25 ہزار سے زائد رقم نکلوانے پر ٹیکس لگنے کی تردید

فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے نان فائلرز کے 25 ہزار روپے سے زائد کیش نکلوانے پر ود ہولڈنگ ٹیکس عائد ہونے کی تردید کردی ۔ ایف بی آر کی جانب سے جاری وضاحتی بیان میں 25 ہزار سے زائد کیش نکلوانے پر ود ہولڈنگ ٹیکس یا اس کی حد میں رد وبدل کی تردید کی گئی ۔ ایف بی آر کے مطابق انکم ٹیکس آرڈیننس میں سیکشن اے 231 اور 231 اے اے میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی، 50 ہزار سے زائد کیش نکالنے پر نان فائلر 0.6 فیصد ود ہولڈنگ ٹیکس ادا کرے گا جبکہ نان فائلر پر 25 ہزار سے زائد کا ڈیمانڈ ڈرافٹ بنوانے پر 0.6 فیصد ود ہولڈنگ ٹیکس عائد ہوگا۔ ایف بی آر کے مطابق فائلر کے لئے بینکنگ ٹرانزیکشن پر ود ہولڈنگ ٹیکس ختم کردیا گیا ، اس لئے بینکنگ سسٹم میں ٹرانزیکشن پر ود ہولڈنگ کا اطلاق صرف نان فائلر پر ہوگا۔ واضح رہے کہ گزشتہ چند روز سے سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والے ایک نوٹیفکیشن میں اس بات کی نشاندہی کی گئی تھی کہ حکومت نے نئے مالیاتی ترمیمی بل میں نان فائلرز یعنی ٹیکس گوشوارے جمع نہ کرانے والوں کے 25 ہزار سے زائد کیش نکالنے پر 0.6 فیصد ٹیکس عائد کیا ہے تاہم وزیر مملکت برائے ریونیو حماد اظہر بھی گزشتہ روز اپنے ٹویٹر پر اس کی تردید کرچکے ہیں۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟