13 نومبر 2018
تازہ ترین
اژدہوں نے کیا مگر مچھوں کا جینا مشکل

امریکی ریاست فلوریڈا کے دلدلی علاقے میں آباد مگرمچھ بڑی تعداد میں دیوہیکل اژدہوں کی خوراک بننے کی وجہ سے اس علاقے سے معدوم ہوتے جا رہے ہیں جس سے اس علاقے میں ماحولیاتی نظام کو شدید خطرات لاحق ہوگئے ہیں۔ بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق فلوریڈا کے دلدلی علاقوں میں پائے جانے والے اژدہوں نے مگرمچھوں ، خرگوشوں، لومڑی اور دیگر جانوروں کو خوراک بنانا شروع کر دیا، جس سے ان کی جانوروں کی نسل ختم ہوتی جا رہی ہے۔ ماہرین نے تیزی سے تبدیل ہونے والی اس صورت حال کو ماحولیاتی نظام کے لئے خطرہ قرار دیا ہے۔ ماہرین کے مطابق کسی سیاح یا مقامی شخص نے غیر ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے اژدہوں کی جوڑی کو اس دلدلی علاقے میں چھوڑ دیا جو کہ اژدہوں کی افزائش کے لئے بہترین جگہ ہے یہی وجہ ہے کہ 1970میں پہلی مرتبہ دکھائی دینے والے اژدہے دیکھتے ہی دیکھتے پورے علاقے میں پھیل گئے اور اب ان کی تعداد ایک محتاط اندازے کے مطابق ڈیڑھ لاکھ سے تجاوز کر گئی ۔ فلوریڈا کے دلدلی علاقے میں پائے جانے والے اژد ہے برمی نسل کے ہیں ، جن کی لمبائی سات میٹر اور وزن 113 کلو گرام تک ہے جو چار فٹ لمبے مگر مچھ تک کو نگل جاتے ہیں۔ جنگلی حیات کے ماہرین  کے مطابق ان اژدہوں کا جانوروں کا بے دریغ شکار کرنے کی وجہ سے اس علاقے میں چھوٹی جسامت کے ممالیہ جانوروں کی تعداد بھی بہت کم ہو کر رہ گئی۔ ماہرین کا خیال ہے کہ یہ اژدہے اب دیگر علاقوں میں پھیلتے جارہے ہیں اس لئے اگر انہیں قابو نہ کیا گیا تو یہ دلدلی علاقہ ویران ہو کر رہ جائے گا۔ جنگلی حیات کے ادارے نے ایک مہم کے تحت 11 سو اژدہوں کو پکڑ لیا، جبکہ اژدہوں کی افزائش کی روک تھام کے لئے مختلف اقدامات پر عمل درآمد کا آغاز کر دیا گیا ۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟