26 ستمبر 2018
تازہ ترین
انرجی سیکٹر کا گردشی قرضہ 3سال میں 320 ارب پر منجمد

ٟحکومت نے2013 سے قبل ماہانہ 15 ارب روپے کے حساب سے بڑھنے والے گردشی قرضے کونہ صرف روکا بلکہ بجلی کے شعبے میں مزید سرمایہ کاری ہوئی اور ٹرانسمیشن لائنوں کے نظام کو بھی اپ گریڈ کیا جا رہا ہے۔ وزارت پانی و بجلی کی دستاویز کے مطابق واجبات کی93 فیصد وصولی کو یقینی بنایا گیا ہے ، آئی پی پیز کو 61 ارب جبکہ پی ایس او کو 24 ارب ادائیگی کی جاچکی ہے ،  2018 میں بجلی کی پیداوار 25 سے 30 ہزار میگاواٹ تک پہنچ جائے گی۔ گزشتہ سال بجلی کی پیداوار میں ریکارڈ اضافہ ہوا اور یہ 16ہزار میگاواٹ تک پہنچ گئی۔ داسو ہائیڈل پاور پروجیکٹ سے4200 میگاواٹ، تربیلا فور توسیعی منصوبے سے1410میگاواٹ، تربیلا فائیو توسیعی منصوبے سے1410میگاواٹ، نیلم جہلم ہائیڈرل پاور پروجیکٹ سے969 میگاواٹ جبکہ سولر منصوبے سے 2017 میں ایک ہزار میگا واٹ بجلی سسٹم میں آجائے گی۔ 


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟