امریکی عدالت کی آن لائن سیلز ٹیکس کی اجازت

امریکی عدالت کی آن لائن سیلز ٹیکس کی اجازت

امریکی سپریم کورٹ نے امریکی ریاستوں کو اشیا کی آئن لائن فروخت پر ٹیکس عائد کرنے کی اجازت دے دی۔ امریکی سپریم کورٹ نے انٹرنیٹ کے دور کے آغاز پر 25سال قبل کیا گیا فیصلہ کالعدم قرار دیتے ہوئے امریکی ریاستوں کو اشیا و خدمات کی آئن لائن فروخت پر ٹیکس عائد کرنے کی اجازت دے دی۔ 9 رکنی بنچ نے فیصلہ 4 کے مقابلے میں 5 ووٹوں سے دیا جس کے تحت 1992کا پرانا فیصلہ بدل دیاگیا، جس میں کہا گیا تھا کہ ریاست صرف فزیکلی موجود کاروبار پر سیلز ٹیکس عائد کر سکتی ہے۔ اس تاریخ ساز فیصلے سے امریکی ریاستوں کو ای کامرس سیکٹر سے ریونیو کمانے کا موقع ملے گا۔ سپریم کورٹ نے یہ فیصلہ سائوتھ ڈاکوٹا کے کیس میں دیا جسے 35 ریاستوں کے ساتھ وفاق کی بھی حمایت حاصل تھی۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟