17 نومبر 2018
تازہ ترین
امریکہ نے غزہ کو دی جانے والی امداد روک دی

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے غزہ کو دی جانے والی 20 کروڑ ڈالر کی امداد کو روکنے کا حکم جاری کیا ہے۔  بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق وائٹ ہائوس سے ایک حکم نامہ جا ری ہوا ، جس میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے غزہ کو دی جانے والی 20 کروڑ ڈالر کی امداد روکنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اب یہ امدادی رقم امریکی مفادات کے تحفظ کے لئے کسی اور مد میں استعمال کی جائے گی ، لہٰذا اس امدادی رقم کو کہیں اور منتقل کر دیا جائے۔ ابھی یہ واضح نہیں کہ یہ امدادی رقم کس اکائونٹ میں منتقل کی جائے گی اور کہاں استعمال ہوگی، تاہم وزارت خارجہ کے ایک عہدے دار نے کہا ہے کہ یہ فیصلہ امدادی رقوم کو امریکی مفادات کے مطابق استعمال ہونے کی یقینی بنانے کے لئے کیا گیا ۔ امریکی صدر کسی بھی ڈیل میں سب سے پہلے امریکی مفادات کی تکمیل کے خواہاں ہیں۔ واضح رہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے صدارت کا منصب سنبھالنے کے بعد سے اسرائیل دوست رویہ رکھا ہے۔ یروشلم کو فلسطین کا دارالحکومت تسلیم کر کے اپنا سفارت خانہ تل ابیب سے یروشل منتقل کیا ، جبکہ اس سے قبل وہ فلسطین سے متعلق اقوام متحدہ کی ساڑھے چھ کروڑ ڈالر کی امداد بھی روک چکے ہیں۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟