18 نومبر 2018
تازہ ترین
امریکا نے ڈو مور کا نہیں بلکہ تعلقات میں بہتری کا تاثر دیا،وزیرخارجہ

وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی نے میڈیا پر چلنے والی خبروں کی سختی سے تردید کرتے ہوئے واضح کیا ہے کہ امریکا نے ڈو مور کا نہیں بلکہ تعلقات میں بہتری کا تاثر دیا ہے۔ وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی کا امریکی وفد سے ملاقات کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے کہنا تھا کہ ملکی موقف کا دفاع میری ذمہ داری ہے۔ ہم نے امریکا کے سامنے حقیقت پسندانہ موقف نہایت برد باری، خود داری اور ذمہ داری سے پیش کیا۔ آج کی نشست سے یہ پیغام گیا کہ پاکستان کی عسکری اور سیاسی قیادت ایک پیج پر ہے۔ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پاک امریکا تعلقات میں تعطل اور سرد مہری تھی، کافی عرصہ کے بعد امریکی وفد نے پاکستان کا دورہ کیا ہے، آج کی نشست نے یہ تعلقات میں حائل تعطل توڑ دیا۔ پہلے اور آج کے ماحول میں دن اور رات کا فرق تھا، پاک امریکا تعلقات میں جمی برف پگھل گئی ہے، ان کا کہنا تھا کہ پاک امریکا تعلقات کی بنیاد سچ پر ہوگی، پومپیو پر واضح کر دیا ہے کہ امریکا کو نئی حکومت کا مینڈیٹ دیکھنا ہوگا، طالبان سے مزاکرات میں امریکا لیڈ کرے گا، پاکستان اور افغانستان کا مستقبل ایک دوسرے سے جڑا ہوا ہے، افغانستان کے امن میں ہماری دلچسپی ہے، پاکستان افغانستان کے امن میں مثبت کردار ادا کرے گا، انہوں نے کہا کہ تاثر دیا جاتا تھا کہ امریکی پہلے وزیر اعظم ہائوس پھر جی ایچ کیو میں ملاقاتیں کرتے تھے، امریکا کو واضح پیغام دیا ہے کہ ہم سب ایک پیج پر ہیں ، بہت سے معاملات پر امریکا اور پاکستان کا نقطہ نظر مختلف ہے، میرا پہلا غیر ملکی دورہ افغانستان کا ہوگا، پومپیو نے مجھے دورہ امریکا کی دعوت دی ہے، امریکا کو کہہ دیا ہے کہ بلیم گیم سے کچھ حاصل نہیں ہوگا، امریکا نے اپنی پالیسی کا از سر نو جائزہ لیا ہے، ڈومور نہیں بلکہ پاکستان کے ساتھ تعلقات میں بہتری کا تاثر دیا ہے، امریکا اب اس نتیجے پر پہنچا کہ افغانستان کا حل سیاسی ہے۔ وزیر خارجہ نے اس امید کا اظہار کیا کہ پاکستان اور امریکا ایک مرتبہ پھر ایک دوسرے کے قریب آئیں گے، پاک امریکا تعلقات میں پیش رفت سچائی کی بنیاد پر ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ امریکی وزیرِ خارجہ نے دورہ کی دعوت دی اقوام متحدہ میں اجلاس میں شرکت کیلئے امریکا کا دورہ کروں گا، ہماری اگلی نشست واشنگٹن میں ہوگی۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان اور افغانستان کا مستقبل ایک دوسرے سے جڑا ہوا ہے جبکہ دیگر ہمسایہ ممالک سے بھی بہتر تعلقات کے خواہاں ہیں، ہمارا پیغام امن، استحکام اور ترقی ہے۔ افغانستان میں امن و استحکام کیلیے مثبت کردار ادا کرینگے، میرا پہلا دورہ افغانستان کا ہو گا۔ میڈیا نمائندوں کے سوالوں کے جواب دیتے ہوئے وزیرِ خارجہ نے کہا کہ آج کی نشست میں امریکی وفد کے ساتھ امداد کے حوالے سے کوئی بات چیت نہیں کی گئی۔

 


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟