22 ستمبر 2018
تازہ ترین
البیضا، یمنی فوج کی پیش قدمی،30حوثی باغی ہلاک

یمن کی سرکاری فوج نے کہاہے کہ عرب اتحادی فوج کی معاونت سے نیشنل فورسز نے ملک کے وسطی علاقے البیضا میں الملاجم  ڈائریکٹوریٹ اور کئی دوسرے مقامات سے حوثی شدت پسندوں کو پسپا کر دیا ہے۔ تازہ لڑائی کے دوران کم سے کم 30 حوثی شدت پسندوں کو ہلاک کر دیا گیا ہے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق یمنی فوج کے زیر انتظام ستمبر ڈاٹ نیٹ کی رپورٹ کے مطابق سرکاری فوج نے الملاجم ڈائریکٹوریٹ کو باغیوں سے مکمل طور پر خالی کرنے اور فضحہ کے علاقے سے باغیوں کو نکال باہر کرنے کے لیے آپریشن جاری رکھا ہوا ہے۔ سرکاری فوج اس وقت البیاض کے علاقے کے قریب پہنچ گئی ہے۔ لڑائی میں البیضا کے کئی اہم تزویراتی مقامات باغیوں سے آزاد کرالیے گئے ہیں جب کہ لڑائی میں 30 حوثی شدت پسندوں کو ہلاک کیا گیا ہے۔ ہلاک ہونے والے باغیوں میں پانچ فیلڈ کمانڈر بھی شامل ہیں۔ادھر دوسری جانب الحدیدہ گورنری میں باغیوں کے خلاف فیصلہ کن کارروائی کے لیے فوج کے تازہ دم دستے بھی تعینات کیے گئے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق حوثی باغیوں نے الحدیدہ شہر اور بندرگاہ کا قبضہ ختم کرنے کے لیے اقوام متحدہ کے امن مندوب مارٹن گریویتھ کی تجاویز مسترد کردی ہیں۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟