23 اکتوبر 2020
تازہ ترین

قومی کرکٹ سرکٹ میں واحد سکھ کرکٹر مہندرپال سنگھ قومی ٹیم میں پاکستان کی نمائندگی کرنے کے لئے پر عزم

قومی کرکٹ سرکٹ میں  واحد سکھ کرکٹر مہندرپال سنگھ نے کوویڈ 19 کے بعد  کرکٹ کے منظر نامے میں مناسب اور باقاعدہ مشق شروع کرنے کے بعد بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کرنا شروع کردیا  ۔کرونا وائرس لاک ڈا¶ن مدت میں اپنی فٹنس کو بہتر بنانے اور بہتر بنانے  کے لئے اپنی تمام تر کوششیں جاری رکھیں ۔ مہندرپال سنگھ حالیہ دنوں  پاکستان کی جانب سے  پہلی مرتبہ اقلیتی  ٹی   ٹونٹی  لیگ میں کھیل رہے تھے جہاں انھیں کی اعلی کارکردگی  اور آل را¶نڈ پرفارمنس جیتنے پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔ آل بلال گرا¶نڈ ٹا¶ن شپ میں کھیلے جارہے ٹورنامنٹ میں 24 اقلیتوں کی ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں جس میں 21 میچ کھیلے جائیں گے۔ سیمی فائنل اور فائنل ایل سی سی اے گرا¶نڈ میں ہونا ہے ، جو ایک سپر سکس مرحلے کے بعد منعقد ہوگا۔ سابق قومی انڈر 19 کھلاڑی مہیندر ، جس نے ضلع لاہور کی نمائندگی کی تھی اور وہ لاہور قلندر رائزنگ اسٹار پروگرام   اور ملک کی 20 لاکھ سکھ برادری کا واحد کرکٹر ہے۔ مہندر کو  پاکستان میں اپنی برادری سے پہلا  قومی کرکٹر بننے کی بہت توقعات ہیں۔ انہوں نے  پاکستان کرکٹ میں سب سے پہلے  اس وقت شہرت حاصل کی جب انہیں ملتان میں پی سی بی ہائی پرفارمنس سنٹر میں منعقد ہونے والے ابھرتے ہوئے کھلاڑیوں کے کیمپ کے لئے ایک متوقع میڈیم پیسر کے طور پر منتخب کیا گیا تھا۔اس کے بعد انھیں  پیٹر نز ٹرافی گریڈ 2 مقابلہ کھیلنے کے لئے منتخب کیا۔ انہوں نے پہلی اننگز میں دو وکٹیں حاصل کیں

قومی کرکٹ سرکٹ میں  واحد سکھ کرکٹر مہندرپال سنگھ قومی ٹیم میں پاکستان کی نمائندگی کرنے کے لئے پر عزم