24 مارچ 2019
تازہ ترین

 ارکان  اسمبلی کی تنخواہوں میں اضافہ لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج

<p>لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعلی اور ارکان پنجاب اسمبلی کی تنخواہوں اور مراعات میں اضافہ لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج کر دیا گیا، جس میں کہا گیا پنجاب حکومت  ارکان پنجاب اسمبلی کی تنخواہوں میں تین سو گنا اضافہ کر رہی ہے اور عوام مہنگائی اور بے روزگاری کی وجہ سے پریشان ہیں، اضافہ کے بل کالعدم قرار دیا جائے۔ لاہور ہائی کورٹ میں وزیراعلی اور ارکان پنجاب اسمبلی کی تنخواہوں اور مراعات میں اضافہ کے خلاف درخواست دائر کردی گئی ، درخواست چوہدری شعیب سلیم ایڈووکیٹ کی جانب سے دائر کی گئی۔ جس میں پنجاب حکومت، اسپیکر پنجاب اسمبلی اور چیف سیکرٹری کو فریق بنایا گیا ہے۔ درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ ارکان پنجاب اسمبلی اور وزیراعلی کی تنخواہوں میں اضافہ غیر قانونی ہے، وزیراعظم ملک چلانے کے لیے دوسروں ممالک سے قرضے لے رہے ہیں۔ دائر درخواست میں کہا گیا پنجاب حکومت ارکان پنجاب اسمبلی کی تنخواہوں میں تین سو گنا اضافہ کر رہی ہے، عوام مہنگائی اور بے روزگاری کی وجہ سے پریشان ہیں۔ درخواست گزار نے استدعا کی وزیراعلی اور ارکان اسمبلی کی تنخواہوں میں اضافہ کے بل کالعدم قرار دیا جائے۔</p>
 ارکان  اسمبلی کی تنخواہوں میں اضافہ لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج