19 دسمبر 2018
تازہ ترین

خیبر پختونخوا میں میڈیکل تعلیم کا حال برا ہے،سپریم کورٹ

<p>اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ نے دو کالجز میں داخلوں پر پابندی لگاتے ہوئے کہا ہے کہ خیبر پختونخوا میں میڈیکل تعلیم کا حال سب سے برا ہے۔ جسٹس عظمت سعید کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے دو رکنی بینچ نے ایبٹ آباد کے نجی میڈیکل کالجز میں داخلوں سے متعلق درخواستوں کی سماعت کی۔ سپریم کورٹ نے مطلوبہ معیار پر پورا نہ اترنے کیوجہ سے فرنٹیئر اور ایبٹ آباد میڈیکل کالجز میں داخلوں پر پابندی لگا دی۔ جسٹس عظمت سعید نے کہا کہ پاکستانی میڈیکل کالجز کی ڈگریوں کی بیرون ملک اہمیت کاغذ کے ٹکڑے سے زیادہ نہیں، ان سے آبادی ویسے تو کنٹرول ہوتی نہیں، بندے مارنے کیلئے اس طرح کے ڈاکٹرز بنائے جاتے ہیں۔ پاکستان میڈیکل اینڈ ڈینٹل کونسل نے مطلوبہ معیار پر پورا نہ اترنے کیوجہ سے ان دونوں کالجز میں داخلوں پر پابندی عائد کی تھی۔ تاہم نجی میڈیکل کالجز نے پی ایم ڈی سی کے احکامات کو پشاور ہائیکورٹ میں چیلنج کیا تو ہائی کورٹ نے پابندی اٹھانے کا حکم جاری کیا۔ جسٹس عظمت سعید نے کہا کہ خیبر پختونخوا میں میڈیکل تعلیم کا حال سب سے برا ہے، آج کے بعد ان دونوں کالجز میں کوئی داخلہ نہیں ہوگا۔ جسٹس سجاد علی شاہ نے کہا کہ میڈیکل کالج کے پاس 250 بیڈز کا ہسپتال ہونا چاہیے جو ان کالجز کے پاس نہیں۔ کیس کی مزید سماعت غیر معینہ مدت کیلئے ملتوی کردی گئی۔علاوہ ازیں سپریم کورٹ نے منرل واٹر کمپنیوں کو دس روز میں اپنی خامیاں دور کرنے کی ہدایت دے دی۔سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں چیف جسٹس پاکستان نے  خصوصی طور پر زیر زمین پانی کے استعمال سے متعلق کیس کی سماعت کی۔عدالت نے مضر صحت پانی پر ایک کمپنی کا پلانٹ سیل کرنے کا حکم دے دیا جب کہ نجی کمپنیوں کو خامیاں دور کرنے کے لیے دس روز کی مہلت دی ہے۔سپریم کورٹ نے عدالتی کمیشن کو ملک بھر کی پانی فروخت کرنے والی کمپنیوں کی انسپکشن کرنے کی ہدایت بھی کی ہے۔چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیئے کہ یہ لوگوں کی زندگیوں کا معاملہ ہے، جھوٹ بول کر آلودہ پانی پلارہے ہیں، شہری بیماریوں میں مبتلا ہورہے ہیں۔اس موقع پر آڈیٹر جنرل نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ ڈیڑھ لٹر پانی کی بوتل پر پیکنگ سمیت 8 روپے 79 پیسے لاگت آتی ہے۔رپورٹ پر جسٹس ثاقب نثار نے کہاکہ عدالت پانی کی قیمت کم کرنے پر غور کررہی ہے، شہریوں کی زندگی کا معاملہ ہے، منرل واٹر بتاکر جھوٹ بول کر پانی پلارہے ہیں، عدالت سخت کارروائی کرے گی، جب تک بڑے آدمی کو ہاتھ نہیں پڑے گا درست کام نہیں کریں گے۔</p>
خیبر پختونخوا میں میڈیکل تعلیم کا حال  برا ہے،سپریم کورٹ