19 دسمبر 2018
تازہ ترین

  کے الیکٹرک اور معذور بچے کے اہل خانہ میں سمجھوتہ

<p>کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)کراچی  کے الیکٹرک اور معذور بچے کے اہل خانہ میں سمجھوتہ ہوگیا جس کے تحت مالی مراعات اور علاج معالجے کے عوض کمپنی کے خلاف مقدمہ واپس لے لیا جائے گا۔ کے الیکٹرک کی غفلت سے 8 سالہ بچے کی دونوں بازوئوں سے محرومی کے کیس کی سماعت سندھ ہائی کورٹ میں ہوئی۔  ہائی کورٹ نے کے الیکٹرک کے 7 گرفتار افسران کی درخواست ضمانت منظور کرلی۔ عدالت نے ملزمان کو پچاس، پچاس ہزار روپے کے مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا۔ کے الیکٹرک اور متاثرہ بچے کے اہل خانہ کے مابین معاہدہ طے پاگیا۔ عدالت نے حکم دیا کہ کے الیکٹرک بچے عمر کے اہلِ خانہ کو ماہانہ 25 ہزار روپے ادا کرے گی۔ اس رقم میں سالانہ پانچ فیصد اضافہ کیا جائے گا۔ کے الیکٹرک ماہانہ 3 سو یونٹ کے مساوی رقم بھی ادا کرے گی اور 8 سالہ عمر کا مکمل علاج کرائے گی۔ مدعی عمر کے اہل خانہ کی جانب سے کے الیکٹرک کے خلاف مقدمہ واپس لے لیا جائے گا۔  ہائی کورٹ نے تفتیشی افسر کو یہ معاہدہ ماتحت عدالت میں پیش کرنے کی ہدایت کردی۔</p>
  کے الیکٹرک اور معذور بچے کے اہل خانہ میں سمجھوتہ